Dinutvei.no Logo Nasjonal veiviser
ved vold og overgrep

اگر آپ کو تشدد یا جنسی حملے کا نشانہ بنایا گیا ہے تو تشدد کا متبادل (ATV) آپ کی کس میں مدد کر سکتا ہے؟

ATVs kontorer har tilbud til utsatte for vold og til barn som lever med vold i nære relasjoner

کیا آپ کو اپنے ساتھی کی جانب سے تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، یا ماضی میں بنایا گیا ہے؟

ATV کی سروس کا بنیادی مقصد وہ لوگ ہیں جو تشدد اور بدسلوکی کا ارتکاب کرتے ہیں۔ کچھ ATV دفاتر تشدد کے متاثرین اور ان بچوں کو بھی جو تشدد والے خاندان کے ساتھ رہتے ہیں کو بھی خدمات فراہم کرتے ہیں۔ خدمات میں انفرادی بات چیت اور گروپ تھراپی شامل ہے۔

تمام دفاتر کورونا وائرس کے لئے رہنما اصولوں پر عمل پیرا ہیں اور استعمال کے لئے مکمل طور پر محفوظ ہیں۔

اگر آپ علاج معالجہ حاصل کرنا چاہتے ہیں، تو آپ اپنے جی پی یا کسی اور پیشہ ورانہ فرد کو آپ کو رجوع کا حوالہ دینے کا کہہ سکتے ہیں، یا آپ خود ATV سے رابطہ کر سکتے ہیں۔ اگر ATV آپ کو آپ کی مطلوبہ مدد فراہم کرنے کے قابل نہیں ہے، تو آپ کو کسی دوسری ایجنسی سے رجوع کا حوالہ دیا جا سکتا ہے۔

ATV سے رابطہ کرنے کے بارے میں یہ فلم دیکھیں:

 

ATV کے بیشتر تھراپسٹ ماہرین نفسیات ہوتے ہیں۔ رازداری کو برقرار رکھنا عملے کا فریضہ ہے اور انہیں آپ کے بارے میں کسی بھی معلومات کو آپ کی پیشگی رضامندی کے بغیر، یا اگر کسی فرد کے فوری نوعیت کے خطرہ کے سبب زخمی ہونے کا امکان نہ ہو، دوسروں کے ساتھ اشتراک کرنے کی ممانعت کی جاتی ہے۔ جب ضروری ہو تو ایک ترجمان فراہم کیا جا سکتا ہے۔بیشتر دفاتر خدمت کے عوض ادائیگی کا تقاضا کرتے ہیں، لیکن کچھ مفت ہیں۔

ناروے میں ATV خدمات کی فہرست۔

ATV ایک فاؤنڈیشن ہے، جسے مرکزی اور مقامی حکومت کے ساتھ ساتھ چندہ اور دیگر ذرائع سے فنڈنگ موصول ہوتی ہے۔

 

رابطہ

ATV کی ویب سائٹ: http://atv-stiftelsen.no/

ای میل: post@atv-stiftelsen.no

KORONAKRISEN – HJELP VED VOLD OG OVERGREP

Døgnåpne tjenester:

Er du voksen og trenger selv hjelp eller ønsker å hjelpe en annen voksen?

Er du bekymret for et barn eller trenger hjelp i omsorgen for barn?

På nettsidene våre finner du oversikt også over andre hjelpetilbud. Det varierer hva de ulike tjenestene kan tilby i øyeblikket. Vi anbefaler deg likevel å ta kontakt og sjekke ut hvilken hjelp du kan få. Spørsmål- og svartjenesten på dinutvei.no er også åpen.