Dinutvei.no Logo Nasjonal veiviser
ved vold og overgrep

کیا آپ تشدد پسند ہیں یا آپ نے تشدد کا ارتکاب کیا ہے؟ آپ اپنے جنرل پریکٹیشنر (GP) سے بات کر سکتے ہیں

کیا آپ کو بہت جلدی غصہ آ جاتا ہے، آپ تنک مزاج ہیں اور آپ کو اپنا غصہ قابو کرنے میں دشواری ہوتی ہے؟ کیا آپ نے اپنے ساتھی یا بچوں کو تشدد کی کاروائیوں کے لئے  دھمکایا ہے یا انکے ساتھ ایسا کیا ہے؟ تب آپ کے اندر تشدد کا مسئلہ ہے۔ آپ اپنے GP کے ساتھ اس مسئلے کا معاملہ اٹھا سکتے ہیں۔

GP کا کام ان مریضوں کی مدد کرنا ہے جن کو کوئی طبعی یا جسمانی بیماری ہے، جو ذہنی طور پر بیمار ہیں اور جو الکحل/منشیات کی بداستعمالی میں ملوث ہیں۔ اسکا مطلب یہ ہے کہ آپ کی جب جانچ کی جاتی ہے، علاج کیا جاتا ہے یا جب آپ کا فالو اپ کیا جاتا ہے اس دوران آپ کے پورے صحت کی ذمہ داری GP پر ہوتی ہے۔ GP کے پاس کسی فرد کی صحت اور زندگی کی صورت حال کا اچھا تجزیہ ہوگا؛ GP بات چیت میں بھی اچھا ساتھی ہو سکتا ہے اور مسلے میں ملوث لوگوں سے ملاقات کا اس کے پاس خاصہ تجربہ ہوتا ہے۔

GP بات چیت میں بھی اچھا ساتھی ہو سکتا ہے اور مسئلے میں ملوث لوگوں سے ملاقات کا اسکے پاس خاصہ تجربہ ہوتا ہے

آپ کا GP رازداری کا پابند ہے اور اس وجہ سے اسے زندگی اور صحت کے لیے خطرہ لاحق ہونے کی صورت میں ہونے والے یا آپ کی اجازت کے بغیر دوسروں کے ساتھ آپ سے متعلق کسی بھی معلومات کا اشتراک کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ آپ کا GP ضروری ہونے پر ترجمان پیش کر سکتا ہے۔

آپ کا GP ضروری ہونے پر آپ کو خدمات صحت کے ماہر کے پاس بھی بھیج سکتا ہے یا آپ کو دوسری ایجنسیوں کے بارے میں بتاتا ہے جو مدد پیش کرتی ہیں اور جن کے لئے ریفرل کی ضرورت نہیں ہوتی ہے – مثلا خاندان کی بہبود کا مرکز، تشدد کا متبادل وغیرہ۔ آپ کو ماہر خدمات صحت وغیرہ کی طرف سے مدد حاصل ہونے کے بعد آپ کے GP پر آپ کا تعاون، جانچ اور فالو اپ کرنے کی ذمہ داری ہے۔

جنرل پریکٹیشنر کا منصوبہ عوامی صحت کی خدمت کا حصہ ہے اور آپ کو معمولی صارف فیس ادا کرنی ہوتی ہے۔


helsenorge.no میں، آپ کو GP کے بارے میں اور GP کیسے بدلیں اس بارے میں معلومات حاصل ہوگی

(صرف ناروی)

KORONAKRISEN – HJELP VED VOLD OG OVERGREP

Døgnåpne tjenester:

Er du voksen og trenger selv hjelp eller ønsker å hjelpe en annen voksen?

Er du bekymret for et barn eller trenger hjelp i omsorgen for barn?

På nettsidene våre finner du oversikt også over andre hjelpetilbud. Det varierer hva de ulike tjenestene kan tilby i øyeblikket. Vi anbefaler deg likevel å ta kontakt og sjekke ut hvilken hjelp du kan få. Spørsmål- og svartjenesten på dinutvei.no er også åpen.