Dinutvei.no Logo Nasjonal veiviser
ved vold og overgrep

آپ مدد حاصل کر سکتے ہیں – بچوں میں جنسی دلچسپی رکھنے والے لوگوں کے لئے خدمات

کیا آپ کو ڈر ہے کہ آپ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے مرتکب ہو سکتے ہیں؟ کیا آپ سیکھنا چاہتے ہیں کہ بچوں کی جانب اپنی کشش پر کیسے قابو پایا جائے؟ “Det finnes hjelp” 18 سال سے زیادہ عمر کے افراد کے لئے ایک خدمت ہے جو بچوں میں جنسی دلچسپی رکھتے ہیں۔

بچوں میں جنسی دلچسپی رکھنے والے افراد کو اکثر اچھی زندگی گزارنا مشکل لگتا ہے۔ لیکن اس طرح کے جذبات پر قابو رکھنا سیکھنا ممکن ہے۔

“(Det finnes hjelp)” کا مقصد مدد کی خدمات سے رابطہ کرنے میں مزاحمت کو کم سے کم کرنا ہے، تاکہ جو مدد چاہتے ہیں اور جنہیں مدد کی ضرورت ہے وہ اس تک آسانی سے رسائی حاصل کر سکیں۔ مددگار کا کام آپ کی دیکھ بھال کرنا ہے، آپ کا تعین کرنا نہیں۔

خدمات ذیل پر مشتمل ہیں:

 

علاج کے بارے میں

اگر آپ علاج چاہتے ہیں، تو آپ خود اس کے لئے درخواست کر سکتے ہیں۔ کسی جی پی یا نگہداشت صحت کے پیشہ ورانہ فرد سے حوالہ لینے کی ضرورت نہیں ہے۔ علاج ایک ماہر نفسیات یا طبیب نفسی سے انفرادی بات کرنے کی تھراپی پر مشتمل ہوتا ہے۔ علاج ایک بیرونی مرِیض کلینک میں کیا جاتا ہے۔

معالجین ماہر نفسیات اور طبیب نفس ہوتے ہیں جو بچوں کے بارے میں جنسی خیالات اور جذبات رکھنے والے لوگوں کا علاج کرنے میں مہارت یافتہ ہوتے ہیں۔ رازداری کو برقرار رکھنا ملازمین کا فرضہ ہے۔ اس لئے آپ کی پیشگی رضامندی کے بغیر (ماسوائے اگر کوئی فوری، جان لیوا صورتحال نہ ہو) دوسروں کے ساتھ آپ کے بارے میں کسی بھی معلومات کا اشتراک کرنے سے منع کیا جاتا ہے۔

«Det finnes hjelp» میں علاج پروگرام کو قومی اور بین الاقوامی تعلیمی کمیونیٹیز کے ساتھ تعاون میں نارویجین ڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ کی طرف سے تیار کیا گیا ہے۔

رابطہ کی معلومات

“Det finnes hjelp” کے بارے میں پروگرام کی خود کی ویب سائٹ پر مزید پڑھیں۔

KORONAKRISEN – HJELP VED VOLD OG OVERGREP

Døgnåpne tjenester:

Er du voksen og trenger selv hjelp eller ønsker å hjelpe en annen voksen?

Er du bekymret for et barn eller trenger hjelp i omsorgen for barn?

På nettsidene våre finner du oversikt også over andre hjelpetilbud. Det varierer hva de ulike tjenestene kan tilby i øyeblikket. Vi anbefaler deg likevel å ta kontakt og sjekke ut hvilken hjelp du kan få. Spørsmål- og svartjenesten på dinutvei.no er også åpen.